تمام ضعیف احادیث کو بغیر ترتیب سے دیکھنے کیلئے بٹن پر کلک کریں

Wednesday, January 28, 2015

٭ حسد نیکیوں کو کھا جاتا ہے


حسد نیکیوں کو کھا جاتا ہے
 
سیدناابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے منسوب ایک روایت میں آیا ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا:
إِيَّاكُمْ وَالْحَسَدَ فَإِنَّ الْحَسَدَ يَأْكُلُ الْحَسَنَاتِ كَمَا تَأْكُلُ النَّارُ الْحَطَبَ
” حسد سے بچو کیونکہ حسد نیکیوں کو اس طرح کھا جاتا ہے جیسے آگ (خشک) لکڑیوں کو کھا جاتی ہے۔“
(سنن ابی داود: ۴۹۰۳)
ضعیف: یہ روایت ضعیف ہے۔
۱: اس کی سند میں جد براہیم (ابراہیم بن ابی اسید کا دادا) مجہول ہے۔
٭حافظ ابن حجررحمہ اللہ نے کہا: "لا یعرف" یہ پہچانا نہیں جاتا۔ (تقریب التھذیب: ۸۵۰۳)
۲:سیدنا انس رضی اللہ عنہ سے مروی سنن ابن ماجہ(۴۲۱۰) والی روایت کا راوی عیسیٰ بن ابی عیسیٰ الحناط: متروک ہے۔ (تقریب التھذیب: ۸۵۰۳)
٭اس راوی پر یحییٰ بن سعید القطان، یحییٰ بن معین، ابو حاتم الرازی، عمروبن علی الفلاس، احمد بن حنبل اور دارقطنی وغیرہم نے شدید جرح کی ہے۔ دیکھئے کتاب الجرح والتعدیل (ج۶ص۲۸۹) و سوالات البرقانی للدارقطنی (۳۸۷) اور عام کتب اسماء الرجال۔

حسد کرنا حرام ہے اور حسد کا رد قرآن و حدیث سے ثابت  لیکن درج بالا روایت ثابت نہیں ہے لہٰذا اسے بغیر جرح کے بیان  نہیں کرنا چاہئے۔

No comments:

تبصرہ کیجئے