تمام ضعیف احادیث کو بغیر ترتیب سے دیکھنے کیلئے بٹن پر کلک کریں

Monday, March 03, 2014

٭ عورت سجدے میں اپنا پیٹ رانوں سے ملائے (2)


عورت سجدے میں اپنا پیٹ رانوں سے ملائے
رسول اللہ ﷺ دو عورتوں کے پاس سے گزرے جو نماز پڑھ رہی تھیں۔ آپ ﷺ نے فرمایا کہ جب تم سجد ہ کرو تو اپنے جسم کے بعض حصوں کو زمین سے چمٹا دو اس لئے کہ اس میں عورت مرد کی مانند نہیں ہے۔ (بیہقی :223/2 ، اعلاء السنن:19/3)
منقطع (ضعیف):  امام بیہقی نے روایت مذکورہ کو امام ابو داود کی کتاب المراسیل (ح 87) سے نقل کرنے سے پہلے اسے "حدیث منقطع" یعنی منقطع حدیث لکھا ہے۔ (السنن الکبریٰ: 223/2)
منقطع حدیث کے بارے میں اصول حدیث کی ایک جدید کتاب میں لکھا ہے: "علماء کا اتفاق ہے کہ منقطع روایت ضعیف ہوتی ہے، یہ اس لئے کہ اس کا محذوف راوی مجہول ہوتا ہے۔" (تیسیر مصطلح الحدیث: ص 78 ، المنقطع)
تنبیہ: مراسیل لابی داود صحاح ستہ کی کتاب نہیں بلکہ صحاح ستہ کی کتاب سنن ابی داود کے مصنف امام ابی داود رحمہ اللہ کی تصنیف ہے، کتاب المراسیل لابی داود (ح 33) میں آیا ہے کہ طاؤس (تابعی) فرماتے ہیں: "رسول اللہ ﷺ نماز میں سینے پر ہاتھ باندھتے تھے۔" (ص 89)
آلِ تقلید کو اس منقطع حدیث سے چڑ ہے۔ یہ لوگ اس حدیث پر عمل کرنے کے لئے تیار نہیں ہیں پھر اہل حدیث کے خلاف کتاب المراسیل کی منقطع روایت سے استدلال کر رہے ہیں ! سبحان اللہ !

No comments:

تبصرہ کیجئے