تمام ضعیف احادیث کو بغیر ترتیب سے دیکھنے کیلئے بٹن پر کلک کریں

Saturday, November 22, 2014

٭نبی ﷺ کا بھائی، وصی اور خلیفہ


نبی ﷺ کا بھائی، وصی اور خلیفہ
 
7: امینی صاحب نے بحوالہ تاریخ طبری (اردو ج۱ص۸۹) ایک روایت لکھی ہے کہ:
”نبی ﷺ نے (سیدنا) علی رضی اللہ عنہ کے بارے میں تمام بنو ہاشم کے سامنے اعلان فرمایا:
"إن ھذا أخي و وصي و خلیفتي فیکم فاسموا له وأطیعوا"
یہ میرا بھائی میرا وصی اور تم میں میرا خلیفہ ہے۔ تم اس کی بات سنو اور جو کہے اسے بجا لاؤ۔ ۔
(شیعیت کا مقدمہ ص۶۱، ۱۶۳۔۱۶۴)
 
موضوع(من گھڑت): تاریخ ابن جریر الطبری کے ہمارے اصل عربی نسخے میں یہ روایت جلد۲صفحہ ۳۲۱پر ہے اور :
۱:اس کی سند میں ایک راوی عبد الغفار بن القاسم ابو مریم الانصاری (رافضی) ہے،  جس کے بارے میں:
٭ امام ابو داود الطیالسی  رحمہ اللہ نے فرمایا: "میں گواہی دیتا ہوں کہ ابو مریم کذاب ہے، کیونکہ میں نے اس سے ملاقات کی ہے اور اس سے (احادیث کا) سماع کیا ہے۔ " (کتاب الضعفاء للعقیلی: ۱۰۰/۳۔۱۰۱، وسندہ حسن)
٭امام احمد بن حنبل رحمہ اللہ فرمایا: "وعامة حدیثه بواطیل" اس کی عام حدیثیں باطل ہیں۔ (کتاب الجرح والتعدیل: ج۲ص۵۳وسندہ صحیح)
۲:اس سند میں محمد بن حمید الرازی بھی سخت مجروح  راوی ہے۔
۳: محمد بن اسحاق بن یسار مدلس ہیں۔
لیکن یہ روایت عبد الغفار بن القاسم کی وجہ سے موضوع ہے۔



No comments:

تبصرہ کیجئے