تمام ضعیف احادیث کو بغیر ترتیب سے دیکھنے کیلئے بٹن پر کلک کریں

Friday, May 16, 2014

٭ لعنتی عالم

بدعات کے ظہور اور صحابہ کرام رضی اللہ عنہم کی گستاخی کے وقت علم ظاہر نہ کرنے والے عالم لعنتی
ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے مرفوعاً مروی ہے کہ:
إذا ظھر البدع فی أمتی (و شتم أصحابی) فلیظھر العالم علمہ فإن لم یفعل فعلیہ لعنۃ اللہ
جب میری امت میں بدعتیں ظاہر ہوجائیں اور میرے صحابہ کو گالیاں دی جائیں تو عالم کو اپنا علم ظاہر کرنا چاہئے، اگر  وہ ایسا نہ کرے تو اس پر اللہ کی لعنت ہے۔
(مسند الفردوس للدیلمی:390/1 ح 1275)
بے   سند و بے اصل: یہ روایت بے سند و بے اصل ہے لہٰذا مردود و باطل ہے۔
 اس مفہوم کی تائید کرنے والی ایک ضعیف و مردود روایت تاریخ دمشق لابن عساکر (26/57)میں ہے۔ اس روایت میں محمد بن عبد الرحمٰن بن رمل الدمشقی مجہول الحال ہے، شیخ البانی رحمہ اللہ نے اس روایت کو منکر قرار دیا ہے۔(السلسلۃ الضعیفۃ:14/4 ح 1506)
دیلمی نے اس کی ایک موضوع (من گھڑت) سند بھی بیان کر رکھی ہے۔ (ایضاً ص 15)

No comments:

تبصرہ کیجئے